Saturday, April 11, 2020

بل گیٹس ویکسین ایجنڈہ اور پاکستان .....!

دنیا کی سب سے بڑی ملٹی نیشنل بائیو کمپنیوں نے بل گیٹس کے ساتھ مل کر ایک مشترکہ پلیٹ فارم ID2020 تشکیل دیا ہے جس کا مقصد پوری دنیا کو ویکسین کے زریعے ڈجیٹلائز کرنا اور حکومتوں کو اپنی عوام کی ویکسینیشن کروانے پر زور دینا ہوگا.
مزے کی بات یہ ہے کہ بجائےکرونا وائرس سے بچاؤ کی حکمت عملیوں پر غور کرنےکے، یہ لوگ بڑے مزے سے ویکسین کے زریعے پوری دنیا کو غلام بنانے کے پلانز پر غور کر رہے ہیں.
یاد رہے ملٹی نیشنل کمپنیوں کی یہ میٹنگ دسمبر 2019 میں ہوئی تھی جبکہ چین میں پہلا کرونا کیس بھی اس میٹنگ کے چند دن بعد ہی سامنے آیا.
یعنی یہ لوگ پہلے سے ہی جانتے تھے کہ ایک وباء پھیلنے والی ہے اور وقت سے پہلے ہی اس وباء کے زریعے ویکسین اور ویکسینز کے زریعے نینو چپ(ڈجیٹلائزیشن) منصوبہ پر عمل کا پلانز بنانے کے لیے الائنس کی صورت اکٹھے بھی ہوگئے.
اگر بل گیٹس کو آج کے دور جدید کا شیطان کہا جائے تو غلط نہ ہوگا. گیٹس انسان کے روپ میں چھپا وہ بھیڑیا ہے جو انسانوں کو صرف اس لیے مارنا چاہتا ہے کیونکہ اسکے بقول اس جیسے امیروں کا پیسہ آخر کب تک غریبوں پر خرچ ہوگا. وہ چاہتا ہے غریب مریں، آدھی دنیا بانجھ بنے، بچے دو ہی اچھے پلان پر چلے تاکہ دنیا کی آبادی کم سے کم ہو اور دنیا کو سکون ملے......
یہ بلکل ابلیس لعین کا پلان ہے کیونکہ انسانوں کی پیدائش اللہ کے حکم سے ہوتی ہے نہ کہ ازخود. اللہ انسان کو آزمائش کے لیے پیدا کرتا ہے جبکہ یہ ابلیس لعین ہی تھا جو آدم کے پیدا ہونے پر آگ بگولا ہوا.
آج میں وثوق سے کہتا ہوں بل گیٹس دجالی قوتوں کا فرنٹ مین ہے. جی ہاں فرنٹ مین. میں اس بات کو ثابت کرنے کے لیے آپکو ایک اشارہ دیتا ہوں.
سن 2014 میں بل گیٹس نے واشنگٹن پوسٹ کو ایک انٹویو دیا. اس انٹرویو میں گیٹس نے اعتراف کیا کہ دنیا کی بڑھتی آبادی تمام مسائل کی جڑ ہے اور کہا "ہم" دنیا کے مخصوص علاقوں میں آبادی کی کثرت ہرگز نہیں چاہتے.
نوٹ کریں یہاں اس نے "میں" نہیں بلکہ "ہم" کہا.
( ثبوت کے لیے سکرین شاٹ دیکھیں یا اس لنک پر انٹرویو پڑھا جاسکتا ہے..... لنک: https://liberationschool.org/real-agenda-gates-foundation/)
اس "ہم" کا واضع مطلب یہ ہے کہ عالمی ڈی پاپولیشن ایجنڈے میں یہ اکیلا ہرگز نہیں ہے بلکہ اسکے ساتھ ایک پورا گینگ ہے.
میرے مطابق یہ گینگ الیومیناٹی سیکرٹ سوسائٹی کے علاوہ کوئی اور نہیں ہوسکتا. گیٹس یقینی طور پر الیومیناٹی کا ممبر ہے اور انکے حکم پر ہی دنیا کی آبادی کو مارنا چاہتا ہے. ویکسینز کے زریعے دنیا کو ڈجیٹلائز کرنے کا پلان بھی الیومیناٹی کا ون ورلڈ آرڈر پلان ہے اور آپ دیکھ لیں اس پلان کو عملی جامہ پہنانے کے لیے گیٹس دن رات ایک کرکے کام کر رہا ہے.
یہاں یہ بتانا بھی ضروری سمجھوں گا کہ اس انٹرویو میں بل گیٹس نے پاکستان کا نام بھی لیا تھا اور ساتھ کہا کہ "ہم" پاکستان میں زیادہ آبادی نہیں چاہتے........ ہممم.....!!
یعنی الیومیناٹی پاکستان میں کم سے کم آبادی چاہتے ہیں کیوں؟ شاید اس لیے کہ انہیں یقین ہے کہ اسرائیل اور دجال کا اگر کوئی سب سے بڑا دشمن ہوگا تو وہ صرف پاکستانی ہی ہوسکتے ہیں اس لیے وہ کبھی پولیو ویکسین سے تو کبھی کسی اور ہتھکنڈوں سے پاکستانی بچوں کو بچپن سے ہی نامعلوم بائیو دوائیاں ویکسینز کی صورت پلاتے ہیں وہ بھی سو فیصد مفت بلکہ الٹا زیادہ سے زیادہ بچوں کو پلانے پر بونس کہ صورت لاکھوں ڈالرز انعام بھی دیتے ہیں.
اب واپس آجائیں....
پہلے اقوام متحدہ کرونا وائرس کو عالمی وباء قرار نہیں دے رہی تھی لیکن پھر اچانک اسے وباء قرار دیا گیا جس پر کئی حلقوں میں سوالات بھی اٹھے کہ آخر اچانک ایسا کیا ہوگیا کہ کل تک انکار کرنے والوں نے ایک دن بعد ہی اسے عالمی وباء قرار دے دیا. درحقیقت اندر کی بات یہ تھی کہ پہلے بل گیٹس نے اقوام متحدہ کے ادارے WHO میں پیسے نہیں لگائے تھے. گیٹس WHO کے چیف سے ملا اور ادارے میں اربوں ڈالرز کی انیوسٹمنٹ کا اعلان کیا اور اسکے ٹھیک اگلے دن WHO چیف ڈاکٹر ٹیڈوس نے کرونا وائرس کو عالمی وباء قرار دے دیا.
درحقیقت یہ گیٹس کا پلان ہے اور گیٹس کو چلانے والی سیکرٹ سوسائٹی کا پلان ہے. اقوام متحدہ تو انکے گھر کی لونڈی ہے. کرونا کو وباء قرار دینا ضروری تھا تاکہ دنیا کو ڈراکر پھر ویکسین سے چپ ڈال دی جائے.
حالیہ ملٹی نیشنل کمپنیوں کا الائنس بھی "بل گیٹس" کے زیر سایہ ہی کام کر رہا ہے. یہ لوگ پہلے ہی پلان کرچکے ہیں کہ کرونا وائرس جب انتہاء کو پہنچ جائے گا تو پھر یہ ویکسین کا اعلان کریں گے جس سے پوری دنیا کو ڈجیٹل سرٹیفکیٹ جاری کردیا جائے گا. ڈجیٹل سرٹیفکیٹ کو آپ نینوچپ سمجھیں جو آپکے جسم میں داخل کردی جائے گی جبکہ آپکو پتا بھی نہیں چلے گا. ایک دفعہ آپ کو چپ لگ گئی تو پھر آپکی پرائیویسی ہمیشہ کے لیے برباد ہوجائے گی. آپ کہاں جاتے ہیں، کیا کرتے ہیں، کس سے ملتے ہیں، کیا کھاتے ہیں، کہاں رہتے ہیں الغرض کچھ بھی چھپا نہیں رہے گا، سب کچھ کسی نامعلوم جگہ سے "خفیہ ہاتھ" ایک بٹن دباکر دیکھ سکے گا.
اس الائنس کا ایک بنیادی نقطہ یہ بھی سامنے آیا ہے کہ یہ لوگ اقوام متحدہ کے زریعے دنیا بھر کی حکومتوں کو زبردستی اپنی عوام کو ویکسین پلانے کی قانون سازی کرنے پر زور دیں گے اور جو ویکسین لینے سے انکار کرے گا اس پر سفری و معاشی پابندیاں لگانے کی دھمکیاں دی جائیں گی. بلکل ویسا ہی ہتھکنڈہ جو پولیو ویکسین کے نام پر اپنایا گیا تھا لیکن اس دفعہ چونکہ کرونا کو عالمی وباء بنوایا گیا ہے لہذہ اب یہ ہتھکنڈہ عالمی سکیورٹی کے نام پر پوری دنیا میں زبردستی نافظ کروانا پڑا تو بھی یہ ایسا ضرور کریں گے.
آپکے پاس بچنے کا آپشن صرف یہی ہوگا کہ یا تو ویکسین کروالیں یا پھر پہاڑں پر چلے جاکر بقیہ زندگی گوشہ نشینی میں گزار دی. یہاں وہ حدیث رسول(صلی اللہ علیہ والہ وسلم) یاد آتی ہے کہ جب دجال کا خروج ہو تو پہاڑوں پر چلے جانا. 

No comments:

Post a Comment

مزید تحریریں